یو اے ای میں شراب نوشی اور اس کی خرید کے لیے پرمٹ کی پابندی ختم

دبئی کے بعد متحدہ عرب امارات کے دارالحکومت ابوظہبی میں بھی شراب خریدنے اور پینے پر عائد پرمٹ کا قانون ختم کر دیا گیا ہے۔

یو اے ای سات عرب ریاستوں پر مشتمل فیڈریشن ہے جو کورونا وبا سے متاثر ہونے والی سیاحت کی صنعت کو فروغ دینے کے لیے مختلف سہولتوں کا اعلان کر رہے ہیں۔

اسرائیل کے ساتھ معاہدے کے بعد وہاں سے بھی بڑی تعداد میں سیاحوں، تاجروں اور صنعتکاروں کی آمد متوقع ہے، شراب نوشی اور اس کی خرید پر عائد پابندیوں کے خاتمے کی ایک اہم وجہ یہ بھی سمجھی جا رہی ہے۔

سرکاری طور پر جاری سرکلر میں کہا گیا ہے کہ ہم شراب کے لیے اجازت نامے کے خاتمے کا اعلان کر رہے ہیں، اب ریاست میں مقیم افراد اور غیرملکیوں کو مخصوص اسٹورز سے شراب خریدنے کی اجازت ہو گی۔

حکومتی ہدایت نامے میں کہا گیا ہے کہ شراب خریدنے والوں کی عمر کم از کم 21 برس ہونا ضروری ہے، شراب خرید کر آگے فروخت کرنے کی اجازت نہیں ہو گی اور اسے نجی مقامات یا کلبز میں استعمال کیا جا سکے گا۔

ہدایت نامے میں یہ وضاحت نہیں کی گئی کہ کیا شراب نوشی کے حوالے سے مسلمانوں پر عائد پابندی ختم کر دی گئی ہے یا ابھی تک برقرار ہے۔

دبئی نے بھی پہلے ہی اس ضمن میں قوانین میں نرمی کا اعلان کیا تھا۔ حکم نامہ کے مطابق یہ اقدام سیاحت کے فروغ کے لیے کیا گیا ہے۔

ٹیگ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

We are working hard for keeping this site online and only showing these promotions to get some earning. Please turn off adBlocker to continue visiting this site