20 سال سے طالبان کے خلاف لڑنے والی خاتون کمانڈر طالبان کے ساتھ مل گئیں

افغان حکومت کی حامی خاتورن کمانڈر کفتر نے طالبان کی صفوں میں شامل ہونے کا اعلان کر دیا ہے۔

افغان طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے کمانڈر کفتر کی شمولیت کی تصدیق کی ہے، انہوں نے ٹوئٹر پر ان کی تصویر بھی شیئر کر دی ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ خاتون کمانڈر کفتر آج صبح صوبہ بغلان کے ضلع نہرین میں اپنے ساتھیوں سمیت طالبان کے ساتھ شامل ہو گئی ہیں۔

افغان حکومت کی جانب سے طالبان کے اس مطالبے کے متعلق کوئی ردعمل سامنے نہیں آیا۔

افغان میڈیا خامہ پریس کے مطابق عائشہ اپنے علاقے میں کمانڈر کفتر کے نام سے مشہور ہیں، وہ روس کے خلاف بھی جہاد میں شریک رہی ہیں۔

گزشتہ 20 سالوں سے وہ افغان حکومت کے ساتھ مل کر طالبان کے خلاف لڑتی رہی ہیں، انہیں افغانستان کی واحد خاتون وارلارڈ بھی کہا جاتا ہے۔

ماضی میں انہوں نے طالبان کمانڈر کو وارننگ دی تھی کہ اگر تم نے مجھے گرفتار کیا تو لوگ تم پر ہنسیں گے اور اگر میں نے تمہیں گرفتار کر لیا تو تمہارے لیے اچھا نہیں ہو گا۔

ان کا اصل نام بی بی عائشہ حبیبی ہے، ان کے 9 بہن بھائی ہیں، وہ اپنے والد کی چہیتی بیٹی ہیں۔

ٹیگ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

We are working hard for keeping this site online and only showing these promotions to get some earning. Please turn off adBlocker to continue visiting this site