امریکہ میں کورونا کی تیسری اور سب سے بڑی لہر کا آغاز ہو گیا، ماہرین کا انتباہ

امریکہ کی 17 ریاستوں میں کورونا کے اب تک کے سب سے زیادہ کیسز رپورٹ ہونے کے بعد ماہرین نے انتباہ جاری کیا ہے کہ اس وبا کی تیسری اور سب سے بڑی لہر کا آغاز ہو گیا ہے۔

امریکہ میں گزشتہ ایک ہفتے کے دوران اوسط کیسز کی شرح میں یکم اکتوبر کے بعد سے 25 فیصد اضافہ ہو چکا ہے، پچھلے 14 روز کے دوران 41 ریاستوں میں کورونا کے مریضوں میں تعداد میں اضافہ ہوا ہے۔

براؤن یونیورسٹی کی پروفیسر ڈاکٹر میگن رینی کا کہنا ہے کہ یہ یقینی طور پر نئی لہر کا آغاز ہے، ایک اور ماہر کے مطابق یہ نئی لہر سب سے زیادہ خطرناک ہو سکتی ہے۔

ماہرین کے مطابق اس خدشے کی بہت سی ٹھوس وجوہات ہیں جن میں لاک ڈاؤن کا خاتمہ، لوگوں کا سردیوں کے باعث گھر میں وقت گزارنا اور عوام کا احتیاطی تدابیر پر عمل کرتے کرتے تھک جانا شامل ہے۔

ہارورڈ میڈیکل اسکول کے پروفیسر انگرڈ کاٹز کا کہنا ہے کہ اگر کورونا کیسز کی شرح کم نہیں ہوتی، لوگ احتیاطی تدابیر کو مکمل طور پر اختیار نہیں کرتے اور لوگ گھروں میں اکٹھے ہوتے ہیں تو یہ ایک مکمل طوفان کو لانے کے مترادف ہے۔

یونیورسٹی آف واشنگٹن نے اگست میں پیشگوئی کی تھی کہ دسمبر سے پہلے 20 امریکی ریاستوں کو دوبارہ سے لاک ڈاؤن نافذ کرنا پڑے گا، ان کے ماڈل کے مطابق اب سے لے کر یکم فروری 2021 کے دوران مزید پونے دو لاکھ امریکی وبا کے ہاتھوں ہلاک ہو سکتے ہیں۔

بہار کے موسم میں کورونا کی پہلی لہر کا زور امریکہ کے شمال مشرقی علاقوں میں زیادہ تھا، گرمیوں میں آنے والی دوسری لہر نے جنوبی ریاستوں کا رخ کیا جبکہ اب زیادہ کیسز مغرب کی وسطی ریاستوں میں سامنے آ رہے ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ وائرس کو پھیلنے کے لیے 10 ماہ مل چکے ہیں اس لیے یہ ملک کے زیادہ تر حصوں تک پہنچ گیا ہے۔

کاٹز کے مطابق امریکہ میں ابھی تک عوام ماسک پہننے اور سماجی فاصلہ برقرار رکھنے جیسے بنیادی رویوں کے متعلق غلط معلومات رکھتے ہیں، ہم اس وقت کورونا وبا کے ساتھ ساتھ غلط انفارمیشن سے بھی لڑ رہے ہیں۔

جان ہاپکنز یونیورسٹی کے ڈیٹا کے مطابق کم از کم 14 ریاستوں میں ٹیسٹ کے مثبت نکلنے کی شرح 10 فیصد سے زیادہ ہو چکی ہے، یہ شرح اگر 3 فیصد سے کم رہے تو وبا کے پھیلنے کا امکان کم ہو جاتا ہے۔

اس وقت تک امریکہ میں کورونا مریضوں کی کل تعداد 82 لاکھ 99 ہزار 278 ہو چکی ہے جبکہ دو لاکھ 23 ہزار 644 افراد ہلاک ہو چکے ہیں جبکہ 53 لاکھ 95 ہزار 401 مریض صحتیاب ہو چکے ہیں۔

ٹیگ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

We are working hard for keeping this site online and only showing these promotions to get some earning. Please turn off adBlocker to continue visiting this site
امریکہ میں کورونا کی تیسری اور سب سے بڑی لہر کا آغاز ہو گیا، ماہرین کا انتباہ is highly popular post having 2 Twitter shares
Share with your friends
Powered by ESSB