بحرین میں مردہ قرار دی گئی دو نومولود بچیاں تدفین کے وقت زندہ ہو گئیں

بحرین کے ایک اسپتال میں ڈاکٹرز کی جانب سے مردہ قرار دی گئی جڑواں بچیاں تدفین کے دوران اچانک زندہ ہو گئیں۔

گلف نیوز کی رپورٹ کے مطابق سلمانیہ میڈیکل کمپلیکس کے ایک ڈاکٹر کو معطل کر کے معاملے کی تحقیقات شروع کر دی گئی ہیں۔

سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیو میں بحرین کے ایک شخص نے دعویٰ کیا کہ اس کی جڑواں بچیوں کو اسپتال نے مردہ قرار دے دیا تھا اور انہیں بیگز میں ڈال کر والدین کے حوالے کر دیا گیا۔

میڈیکل رپورٹ کے مطابق ایک بچی اسپتال پہنچنے سے قبل فوت ہو گئی تھی جبکہ دوسری چند گھنٹے انتہائی نگہداشت یونٹ میں زیرعلاج رہنے کے بعد چل بسی۔

بچیوں کے والد کے مطابق جب انہیں تدفین کے لیے قبرستان لے جایا گیا تو وہ رونے لگیں جس کے بعد انہیں فوری طور پر اسپتال منتقل کر دیا گیا مگر اس بار وہ زندہ نہ بچ سکیں۔

سلیمانیہ میڈیکل کمپلیکس کے چیف آف میڈیکل اسٹاف کی رپورٹ کے مطابق بچیوں کی ماں 15 اکتوبر کو شام 8 بجے اسپتال پہنچی تھی، اس کی حالت تشویشناک تھی۔

رپورٹ کے مطابق ڈیلیوری کے وقت ایک بچی کو مردہ قرار دے دیا گیا جبکہ دوسری بچی میں زندگی کے آثار ملنے پر فوری طور پر آئی سی یو میں منتقل کر دیا گیا۔

رات ساڑھے 9 بجے دوسری بچی کو بھی مردہ قرار دے دیا گیا اور دونوں کو والدین کے حوالے کر دیا گیا جبکہ اس وقت تک بچیاں زندہ تھیں۔

وزارت صحت نے تصدیق کی ہے کہ چیف آف میڈیکل سروسز ڈاکٹر نبیل العشیری کی سربراہی میں ایک تحقیقاتی کمیٹی قائم کر دی گئی ہے۔

ٹیگ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

We are working hard for keeping this site online and only showing these promotions to get some earning. Please turn off adBlocker to continue visiting this site