ایک ہی شخص کئی بار کورونا کا شکار ہو سکتا ہے، نئی تحقیق میں انکشاف

امپیریل کالج لندن کے ریسرچرز نے انکشاف کیا ہے کہ کورونا میں مبتلا ہونے کے بعد اس کا مقابلہ کرنے کے لیے پیدا ہونے والی اینٹی باڈیز تیزی سے ختم ہونے لگتی ہیں جس کی وجہ سے ایک شخص کئی بار کورونا کا شکار ہو سکتا ہے۔

انٹی باڈیز انسانی جسم کی قوت مدافعت کا بنیادی جزو ہے جو ہر وقت جراثیموں اور وائرس کے خلاف لڑتی رہتی ہیں۔

امپیریل کالج لندن میں ریسرچرز کی ٹیم نے تحقیق کے بعد بتایا ہے کہ جون میں کورونا کا شکار ہونے والوں کے جسم میں ستمبر تک انٹی باڈیز کی شرح 26 فیصد تک گر گئی ہے۔

اس تحقیق کے پہلے مرحلے پر جون کے آخر اور جولائی کے آغاز میں 1000 افراد میں سے 60 میں انٹی باڈیز موجود پائی گئیں۔

تاہم سمتبر میں ہونے والے ٹیسٹ سے معلوم ہوا کہ 1000 میں سے 44 افراد کے جسم میں انٹی باڈیز موجود تھیں جس سے یہ نتیجہ نکالا جا سکتا ہے کہ ایک چوتھائی افراد میں انٹی باڈیز گر گئی تھیں۔

ریسرچ کرنے والی ٹیم میں شامل پروفیسر ہیلن وارڈ کا کہنا ہے کہ انٹی باڈیز تیزی سے غائب ہوتی ہیں، ابھی تحقیق کے پہلے مرحلے میں 3 ماہ گزرے ہیں اور 26 فیصد انٹی باڈیز گر چکی ہیں۔

نوجوانوں کی نسبت 65 برس سے زیادہ کی عمر والوں میں انٹی باڈیز گرنے کی رفتار مزید تیز دیکھی گئی ہے، اسی طرح جن لوگوں میں کورونا کی علامات ظاہر نہیں ہوئیں ان میں بھی انٹی باڈیز کم ہونے کی رفتار تیز رہی جبکہ کورونا کی شدید علامات کا شکار ہونے والوں میں یہ رفتار کم رہی ہے۔

ہیلتھ ورکرز میں انٹی باڈیز زیادہ دیر تک موجود رہی ہیں اس کی ممکنہ وجہ یہ ہے کہ انہیں مسلسل کورونا وائرس کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

انٹی باڈیز کورونا وائرس کی سطح سے چمٹ جاتی ہے اور اسے انسانی خلیوں پر حملہ کرنے سے روک دیتی ہیں، اس کے ساتھ ساتھ وہ جسم کے مدافعاتی نظام کو بھی جگاتی ہیں۔

اب تک دنیا میں کئی ایسے کیسز سامنے آ چکے ہیں جن میں ایک ہی شخص دو بار کورونا کا شکار ہوا ہے تاہم سائنسدانوں کو امید ہے کہ دوسری بار ہونے والی انفیکشن شدید نہیں ہو گی کیونکہ قوت مدافعت کی یادداشت میں گزشتہ حملہ موجود ہوتا ہے۔

یاد رہے کہ کورونا وائرس کی 4 ایسی اقسام ہیں جن کے مقابلے میں انٹی باڈیز کم ہو جاتی ہیں، ان میں سے ایک قسم زکام کی ہے، اس کے خلاف انٹی باڈیز 6 ماہ سے ایک برس کے دوران ختم ہو جاتی ہیں۔

ٹیگ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

We are working hard for keeping this site online and only showing these promotions to get some earning. Please turn off adBlocker to continue visiting this site
ایک ہی شخص کئی بار کورونا کا شکار ہو سکتا ہے، نئی تحقیق میں انکشاف is highly popular post having 2 Twitter shares
Share with your friends
Powered by ESSB