مجھے جیل میں چوہوں کا بچا کھانا دیا جاتا تھا، مریم نواز کا الزام

پاکستان مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز نے کہا ہے کہ جیل میں انہیں چوہوں کا بچا ہوا کھانا کھلایا جاتا تھا جبکہ تھائی رائیڈ کے لیے درست ادویات بھی نہیں دی جاتی تھیں۔

اپنی رہائش گاہ جاتی امرا میں بیٹ رپورٹرز سے بات کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ  میں فنگس والی ادویات استسعمال کرنے پر مجبور تھی۔

انہوں نے وزیراعظم عمران خان کے متعلق کہا کہ وہ اپنے بہنوئی کے دوست کے پلاٹ پر قبضے کا ذکر کرتے ہیں، کیا کوئی انہیں سمجھانے والا نہیں کہ ایسی باتیں ٹی وی پر نہیں کرتے۔

مریم نواز کا کہنا تھا کہ ملکی حالات اس نہج پر پہنچ چکے ہیں کہ حکومت کا جانا بنتا ہے۔ عمران خان کو تو اس قابل بھی نہیں سمجھتے کہ لوگ ان کو الزام دیں۔

انہوں نے کہا کہ حمزہ شہباز کو بھی نوازشریف سے وفاداری کی سزادی جارہی ہے۔ شہباز شریف نوازشریف سے وفاداری کی وجہ سے قید کاٹ رہے ہیں۔

ایک صحافی نے سوال پوچھا کہ جس طرف حالات جا رہے ہیں تو کیا ہم کسی خوفناک حادثے کا شکار ہوسکتے ہیں؟ مریم نواز نے جواب میں کہا کہ میرا بھی یہی خوف ہے۔ لوگوں کو حوصلہ کرنا پڑے گا، لوگ اٹھ رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ آئے روز پنجاب پولیس کے انسپکٹر جنرلز تبدیل ہورہے۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پشاور ہائی کورٹ کے چیف جسٹس وقار سیٹھ تاریخ میں امر ہوگئے ہیں۔ ہمیشہ نوکری نہیں بچائی جاتی، نوکری کے بعد بھی کچھ ہوتا ہے۔

مریم نواز نے کہا کہ دادی کی وفات سے دو تین روز قبل ویڈیولنک پربات ہوئی تھی۔ دادی کی یاد داشت کمزور ہوچکی تھی۔ آخری بار جب دادی سے بات ہوئی تو وہ پوچھ رہی تھیں کہ کیا تم جیل سے باہرآگئی ہو۔ میری دادی سمجھ رہی تھیں کہ میں ابھی تک جیل میں ہوں۔

مریم نواز نے کہا کہ میری دادی کو نوازشریف اور شہبازشریف سے بہت محبت تھی۔ میرے والد دادی کے بغیر کھانا نہیں کھاتے تھے۔ میری دادی کو بھی میرے والد سے بہت محبت تھی۔

انہوں نے کہا کہ ڈاکٹروں کے منع کرنے کے باوجود وہ نوازشریف کے لیے لندن گئیں۔ دادی کی وفات شریف خاندان کے لیے بہت بڑا صدمہ ہے۔ حکومت نے دادی کی وفات کے بارے میں نہیں بتایا۔

مریم نواز نے کہا کہ میرا بیٹا جنید صفدر مجھے لاہور سے اطلاع دینے کے لیے پشاور کی طرف روانہ ہوا۔ پشاور جلسے میں کسی بھی طرح کا ٹیلی فونک رابطہ نہیں ہو رہا تھا۔

ایک سوال کے جواب میں مریم نواز نے کہا کہ انہوں نے نوازشریف کو وآپس آنے سے  منع کیا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

Adblock Detected

We are working hard for keeping this site online and only showing these promotions to get some earning. Please turn off adBlocker to continue visiting this site