حمزہ شہباز کی درخواست ضمانت پر سپریم کورٹ کا نیب کو نوٹس جاری

سپریم کورٹ نے مسلم لیگ (ن) کے رہنما حمزہ شہباز کی درخواست ضمانت پر نیب کو نوٹس جاری کر دیا ہے۔

حمزہ شہباز کی درخواست ضمانت کی سماعت کے دوران جسٹس مشیر عالم نے ریمارکس دیے کہ ملزم سے منسوب اکاؤنٹس کا جائزہ لیا تو مشکل ہو جائے گی، بہتر ہے کہ عدالت سے میرٹ پر آبزرویشن نہ لیں۔

جسٹس یحیٰ آفریدی نے ریمارکس دیے کہ میرٹ پر ضمانت نہ مانگیں، یہ پہاڑ سر کرنے والی بات ہو گی۔ عدالت نے سلمان شہباز اور دیگر ملزمان کی عدم گرفتاری پر اظہار برہمی بھی کیا۔

عدالت نے نیب کے وکیل سے استفسار کیا کہ ٹرائل کورٹ میں اب تک کتنے مقدمات زیر التوا ہیں، حمزہ شہبازکے کیس کا کیا نمبر ہے اور ٹرائل کورٹ میں اس کا نمبر کب آئے؟

اس موقع پر جسٹس یحیٰ آفریدی نے یاد دہانی کرائی کہ سپریم کورٹ کے حکم کے مطابق نیب مقدمات کی سماعت روزانہ کی بنیاد پر ہو گی، ٹرائل کورٹ میں کس کے ساتھ امتیازی سلوک نہیں کیا جا سکتا۔

انہوں نے استفسار کیا کہ نیب کو گواہان کے بیانات ریکارڈ کرنے کے لیے کتنا وقت درکار ہے؟

ایڈیشنل پراسیکیوٹر نیب عمران الحق نے سپریم کورٹ کو بتایا کہ نیب 6 ماہ میں تمام گواہوں کے بیانات ریکارڈ کر لے گا۔

جسٹس مشیر عالم نے پوچھا کہ گواہوں کے بیانات میں اتنا وقت کیوں لگ رہا ہے؟ مقدمے کے دیگر ملزمان کو گرفتار کیوں نہیں کیا گیا؟

جسٹس طارق مسعود نے کہا نیب کا یہی تو کام ہے ایک کو گرفتار کر کے باقیوں کو کھلا چھوڑ دیتے ہیں۔ آپ نے ملزم کو 2019 میں گرفتار کیا، جائیدادیں ضبط کیوں نہیں ہو سکیں؟

جسٹس یحییٰ آفریدی نے ہدایت کی کہ نیب کے تمام زیر التوا کیسز کی تفصیل عدالت میں جمع کرائیں۔

سپریم کورٹ نے سلمان شہباز سمیت تمام مفرور ملزمان کی جائیداد ضبطگی کی تفصیلات طلب کر لی ہیں۔

بعد ازاں عدالت نے کیس کی سماعت غیر معینہ مدت تک ملتوی کر دی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
حمزہ شہباز کی درخواست ضمانت پر سپریم کورٹ کا نیب کو نوٹس جاری is highly popular post having 1 Twitter shares
Share with your friends
Powered by ESSB

Adblock Detected

We are working hard for keeping this site online and only showing these promotions to get some earning. Please turn off adBlocker to continue visiting this site