علی ظفر کا ہتک عزت کیس، سماعت کے دوران اداکارہ عفت عمر کی طبیعت خراب

معروف گلوکار اور اداکار علی ظفر کی جانب سے میشا شفیع کے خلاف دائر کیے گئے ہتک عزت کے کیس میں اداکارہ عفت عمر عدالت میں پیش ہوئیں تاہم سماعت کے دوران ان کی طبیعت خراب ہو گئی۔

سیشن کورٹ کے جج امتیاز علی کی عدالت میں ہونے والی سماعت کے دوران عفت عمر کی یہ پہلی پیشی تھی، علی ظفر کے وکلا کی جانب سے جرح شروع ہوئی تو ان کی طبیعت خراب ہو گئی جس کی وجہ سے سماعت ملتوی کرنا پڑی۔

اداکارہ عفت عمر کا متنازعہ ٹویٹ، سوشل میڈیا پر ہلچل مچ گئی

گلوکار علی ظفر کی جانب سے گلوکارہ میشا شفیع کے خلاف دائر کیے گئے ہتک عزت کے کیس میں اداکارہ عفت عمر کی پہلی جرح کے دوران ہی طبیعت خراب ہوگئی، جس وجہ سے عدالت سے سماعت کو 21 دسمبر تک ملتوی کردیا۔

عفت عمر نے چند ماہ قبل اپنا بیان ریکارڈ کرایا تھا، وہ میشا شفیع کی طرف سے گواہ کی حیثیت سے پیش ہوئیں اور یہ ان پر پہلی جرح تھی۔

عفت عمر 30 نومبر کو جرح کے لیے عدالت میں پیش ہوئی تھیں، تاہم اس وقت بھی انہوں نے تھکاوٹ و طبیعت میں خرابی کے باعث سماعت کو ملتوی کرنے کی درخواست کی تھی۔

عدالت نے ان کی درخواست قبول کرتے ہوئے انہیں 12 دسمبر کو بلایا تھا، جہاں آج وہ پیش ہوئیں مگر جرح کے دوران ایک بار پھر ان کی طبیعت خراب ہوگئی۔

علی ظفر کے وکلاء کی جانب سے سوالات کے جواب میں عفت عمر نے بتایا کہ وہ سوشل میڈیا پر علی ظفر کو بدنام کرنے کے کیس میں عبوری ضمانت پر ہیں۔

جرح کے دوران انہوں نے کہا کہ مجھے چکر آ رہےہیں جس پر عدالت نے انہیں فوری کرسی اور پانی فراہم کرنےکا حکم دیا۔

بعد ازاں عدالت نے اداکارہ میشا شفیع کے خلاف کیس کی سماعت 19 دسمبر تک ملتوی کرتے ہوئے مزید گوہواں کو پیش ہونے کا حکم دے دیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
علی ظفر کا ہتک عزت کیس، سماعت کے دوران اداکارہ عفت عمر کی طبیعت خراب is highly popular post having 1 Twitter shares
Share with your friends
Powered by ESSB

Adblock Detected

We are working hard for keeping this site online and only showing these promotions to get some earning. Please turn off adBlocker to continue visiting this site