آپ آئین شکنی کریں گے تو ہم نام بھی لیں گے، نوازشریف

سابق وزیراعظم نوازشریف نے کہا ہے کہ 2018 کے انتخابات میں تاریخ کی سب سے بڑی دھاندلی ہوئی، چند جرنیلوں نے فیصلہ کیا کہ نوازشریف اور مسلم لیگ (ن) کو عبرت کا نشانہ بنانا ہے۔

مینار پاکستان پر ہونے والے پی ڈی ایم کے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے نوازشریف نے وزیراعظم کو کٹھ پتلی قرار دیا اور سوال پوچھا کہ کیا اس تباہی اور بربادی کا ذمہ دار صرف عمران خان ہے یا وہ لوگ ہیں جنہوں نے سازش کے ذریعے اسے ہمارے سر پر مسلط کر دیا؟

ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آپ کہتے ہیں نکہ نام نہ لوں، آپ آئین شکنی کریں گے تو کیا میں واپڈا کا نام لوں؟ اس ملک کو برباد کر دیا ہے اور کہتے ہیں نام نہ لوں۔

حکومت پر تنقید کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ایک کروڑ نوکریوں کا وعدہ کرنے والوں نے لاکھوں افراد کا روزگار کیوں چھین لیا؟ 50 لاکھ گھر بنانے کا دعویٰ کیوں پورا نہیں ہوا، کس سے پوچھیں؟

نوازشریف نے کہا کہ عمران خان کا فارن فنڈنگ کیس کئی برسوں سے کیوں لاپتا ہے؟  علیمہ خان نے اربوں کی جائیداد کیسے بنائی، کس سے پوچھیں؟

انہوں نے اعلان کیا کہ نواز شریف عوام کو حق حکمرانی دلوائے بغیر پیچھے نہیں ہٹے گا، یہ میرے اور 22 کروڑ عوام کے ضمیر کی آواز ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ جب پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کہیں گے ہم اسمبلیوں سے استعفے دے دیں گے۔

About Post Author

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

Adblock Detected

We are working hard for keeping this site online and only showing these promotions to get some earning. Please turn off adBlocker to continue visiting this site