ایل این جی کی خریداری میں تاخیر، جنوری کے لیے مہنگی ترین بولی کا انکشاف

پاکستان میں قدرتی گیس (ایل این جی) کی جنوری میں درآمد کیلئے ہنگامی بولی کے ذریعے ریکارڈ مہنگی قیمتیں لگائی گئی ہیں۔

8 جنوری سے 18 جنوری کے درمیان ایل این جی بحری جہازوں کے نہ آنے کے خلا کو پر کرنے کی کوششوں میں حکومت نے خریداری کے قواعد کی ہنگامی شقوں کے مطابق عمل کیا تاکہ پاکستان کو ایل این جی کی دوسری بولی کی اجازت مل جائے۔

پیشکشوں کے جواب میں دو بولی دہندگان نے 8 سے 9 جنوری کیلئے اپنی دو بولیاں جمع کرائی ہیں جس میں ڈی ایکس ٹی کموڈیٹیز کی جانب سے 28۔15 فی برٹش تھرمل یونٹ (ایم ایم بی ٹی یو) کی کم ترین پیش کش اور ٹرافیگورا کی جانب سے 8۔19 ڈالر فی ایم ایم بی ٹی یو کو پیش کش شامل تھی۔

مذکورہ دونوں پیش کشیں مہنگی ترین ہیں اور پہلی مرتبہ برینٹ پرائس کی فیصد کے بجائے فی ایم ایم بی ٹی یو ڈالر کا استعمال کیا گیا، تاہم کم ترین 28۔15 ڈالر فی ایم ایم بی ٹی یو کی بولی برینٹ کے تقریباً 35 فیصد کے برابر ہے۔

12 سے 13 جنوری کے لیے ایک مرتبہ پھر کوئی پیشکش موصول نہیں ہوئی، 17 جنوری سے 18 جنوری کے لیے ای این او سی کی جانب سے 12.95 ڈالر فی ایم ایم بی ٹی یو اور ٹرافیگورا کی جانب سے 15.95 ڈالر فی ایم ایم بی ٹی یو کی دو پیشکشیں موصول ہوئیں۔

اس صورت میں 12.95 ڈالر کی کم ترین پیش کش برینٹ پرائس کے تقریباً 30 فیصد بنتی ہے۔

ایل  این جی کی مہنگی درآمد پر ایک عہدیدار کا کہنا تھا کہ معاشی لحاظ سے توانائی کے شعبے کیلئے ناقابل عمل ہونے کے ساتھ ساتھ تحریک انصاف کی حکومت کیلئے بھی سیاسی خود کشی کے مترادف ہے۔

انہوں نے امکان ظاہر کیا کہ ہوسکتا ہے حکومت ان پیشکشوں کو منسوخ کردے، اور وضاحت کرتے ہوئے بتایا کہ 15.28 فی ایم ایم بی ٹی یو پر ایل این جی تقریباً 85-90 ڈالر فی بیرل تیل کے برابر ہوجائے گی جبکہ ابھی برینٹ پرائس تقریباً 50 ڈالر فی بیرل ہے۔

 ایل این جی کی قیمت برینٹ کے 17 فیصد سے زائد ہونے پر ناقابل عمل اور ہائی اسپیڈ ڈیزل، خام اور فرنس آئل سے بھی مہنگی ہوجاتی ہے۔

اس کے بر عکس فرنس آئل مقامی ریفائنریز میں دستیاب ہے اور اس سے زرِ مبادلہ کی بھی بچت ہوگی۔

عہدیدار کا کہنا تھا کہ حکومت نے معاہدوں کی لچک کو استعمال کرتے ہوئے اکتوبر میں 6 ڈالر فی ایم ایم بی ٹی یو ترسیل کے لیے پیشگی آرڈر دے دیا تھا جو اب 13 سے 15 ڈالر فی ایم ایم بی ٹی یو کا پڑ رہا ہے۔

واضح رہے اوسطاً 32 لاکھ ایم ایم بی ٹی یو کا کارگو ایک کروڑ 90 لاکھ ڈالر تک کا پڑتا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

Adblock Detected

We are working hard for keeping this site online and only showing these promotions to get some earning. Please turn off adBlocker to continue visiting this site