اشیاء کی برآمد اور درآمد، وفاقی کابینہ کا اہم فیصلہ

وفاقی کابینہ نے وزارت تجارت کے علاوہ دیگر وزارتوں کے ذریعے درآمد/ برآمد کی اجازت کے اجراء پر پابندی عائد کر دی ہے۔

یہ فیصلہ وزارت تجارت کی جانب سے ذاتی حفاظتی سامان کی برآمد پر پابندی لگانے کی سمری کے ذریعے کیا گیا۔

وزارت تجارت نے کابینہ کو بتایا کہ چین کے شہر ووہان سے پھیلنے والے کورو نا وائرس نے پوری دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے، اب تک پاکستان میں 250 سے زائد کیس رپورٹ ہو چکے ہیں۔

اس صورتحال کے پیش نظر منسٹری آف نیشنل ہیلتھ سروسز ریگولیشن اینڈ کوآرڈینیشن اور نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی نے وائرس کے روک تھام کیلئے احتیاطی تدابیر سے متعلق ہدایات جاری کی ہیں لیکن  یہ ہدایات وازرت تجارت کی مشاورت کے بغیر جاری کی گئیں۔ 

وزارت تجارت کے حکام کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس کا پھیلاؤ روکنے کے لیے صحت کے مراکز  کو کافی تعداد میں ابتدائی طبی مواد کی انتہائی ضرورت ہے، ان میں N95 ماسک، دستانے اور چشمے شامل ہیں۔

منسٹری آف نیشنل ہیلتھ سروسز ریگولیشن اینڈ کوآرڈینیشن نے ذاتی حفاظت کے آلات کی ایک فہرست بھی فراہم کر دی ہے جس میں جائزہ لینے اور سامان اکٹھا کرنے کے عمل کے مکمل ہونے تک اشیاء پر پابندی عائد کرنے کی درخواست کی گئی ہے.

وزارت تجارت نے کابینہ سے جن اشیاء کی برآمد پر پابندی عائد کرنے کے لیے منظوری طلب کی ان میں tayvek   سوٹ ،ڈسپوز ایبل گاؤن، ڈسپوز ایبل دستانے، چہرے کی ڈھالیں، N95ماسک, بائیوہیزرڈ بیگ, چشمے, جوتوں کا غلاف, سرجیکل ماسک اور ہاتھ صاف کرنے والی جراثیم کش ادویات وغیرہ شامل ہیں۔

کابینہ میں  ایک رکن نے SWOT Analysis کرانے کا مشورہ دیا تاکہ کورونا وائرس کے معیشت پر اثرات کا اندازہ لگایا جا سکے۔ وزارت تجارت نے کابینہ کو بتایا کہ برآمدات/درآمدات پر پابندی اور نرمی کا اختیار کابینہ کے پاس ہے جبکہ ایسی مثالیں موجود ہیں جہاں پر کچھ ڈویژنز نے خود ان اختیارات کا استعمال کیا ہے۔

 وزارت تجارت نے اس عمل پر  ناپسندیدگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس سے منافع خوری کو فروغ ملتا ہے۔

کابینہ نے ان خلاف ورزیوں کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے تمام ڈویژنز کو ہدایت جاری کی ہے  کہ وہ اپنے اپنے شعبوں میں آنے والی اشیاء کی برآمد/درآمد پر پابندی عائد کرنے سے گریز کریں اور اپنی  تجاویز وزارت تجارت کو بھیجیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

We are working hard for keeping this site online and only showing these promotions to get some earning. Please turn off adBlocker to continue visiting this site