آن لائن لڈو کھیلتے کھیلتے پاکستانی اقرا کو بھارتی ملائم سنگھ یادیو سے پیار ہو گیا ، لڑکی براستہ نیپال بینگلور پہنچ گئی، دونوں کی محبت کا انجام کیا ہوا ؟ جانیں 

اسلام آباد (رافعہ زاہد سے ) محبت کے چکر میں ایک اور پاکستانی لڑکی بھارتی جیل کی سلاخوں تک جا پہنچی۔بینگلور میں سیکیورٹی گارڈ کے ساتھ آن لائن لڈو کھیلتے کھیلتے بات شادی تک پہنچ گئی۔
جی ٹی وی نیوز کے پروگرام مدِمقابل رؤف کلاسرا کے ساتھ میں سینئر اینکر پرسن اور صحافی رؤف کلاسرا نے اس کیس سے متعلق اہم تفصیلات شیئر کر دیں ۔ رؤف کلاسرا نے پوری کہانی سناتے ہوئے انکشاف کیا
بھارتی پولیس نے پاکستان سے غیرقانونی طور پربھارت جانے والی 19 سالہ لڑکی اور اسے غیر قانونی طور پر بھارت بلوانے والے شہری کو گرفتار کرلیا۔
چھبیس سالہ ملائم سنگھ یادواترپردیش کا رہائشی ہے جبکہ اقراء جیوانی نامی لڑکی کا تعلق پاکستان کے شہرحیدرآباد سے ہے، ملائم سنگھ بنگلورمیں بطور سیکیورٹی گارڈ ملازمت کرتا تھا اور لڑکی سے اس کا رابطہ گیمنگ ایپ پرہوا۔ دونوں آن لائن گیم لڈو کھیلا کرتے تھے۔
پاکستان میں باربارکی جانے والی واٹس ایپ کالز نےبنگلور پولیس کو اقراء کا سراغ لگانے میں مدد کی ۔ بنگلورو پولیس کے مطابق لڑکی بوائے فرینڈ سے شادی کرنے کے لیے غیر قانونی طور پر بھارت میں میں داخل ہوئی تھی اور شہر میں رہنے کے لیے جعلی شناخت اختیارکی۔
ملزم کے مطابق اقراء سے 2022 میں رابطہ ہوا اور پھرمحبت ہوگئی، نومبر میں اسے نیپال بلایا جہاں سے غیرمحفوظ سرحد کے ذریعے بھارت میں داخلہ ممکن ہوا۔ اس جوڑنے نے نیپال میں ہی شادی کی اورپھر بہار پہنچے۔ دونوں بعد میں بنگلورو آئے اور جناسندرا میں کرائے کے مکان میں رہنے لگے، جہاں یادو نے سیکیورٹی گارڈ کے طور پر کام کرنا شروع کیا۔
پولیس نے بتایا کہ لڑکی نے اپنا نام بدل کر روا یادو رکھ لیا تھا، اس نے پاسپورٹ کے لیے درخواست دے رکھی تھی اوروالدین بہن بھائیوں سے رابطے میں تھی۔ وہ تقریباً ہرروزاپنے گھر والوں کو واٹس ایپ کال کرتی تھی جنہیں انٹیلی جنس بیورو (آئی بی) کے اہلکاروں نے کالز کو ٹریس کیا اور یوں یہ جوڑا پکڑا گیا۔
پولیس نے ملائم سنگھ یادیواوراس مکان کے مالک کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے جہاں دونوں رہائش پزیرتھے۔ گرفتاری کے بعد لڑکی کو ایف آر آراو (فارنرز ریجنل رجسٹریشن آفس) کے حوالے کر دیا گیا۔ بعد ازاں اسے خواتین کے لیے مختص اسٹیٹ ہوم میں بھیج دیا گیا۔
انڈین پینل کوڈ (آئی پی سی) کی دفعہ 420 (دھوکہ دہی)495 (شادی چھپانا)، 468 (جعل سازی) اور 471 (جعلی دستاویزات) کا استعمال ملائم سنگھ یادو پر لگایا گیا ہے۔ جب کہ مالک مکان کیخلاف پاکستانی لڑکی کے سرجاپور روڈ کے احاطے میں غیر قانونی قیام کی اطلاع نہ دینے پر ایف آئی آر درج کی گئی ہے۔گووندا ریڈی ملزمان کا مالک مکان پر بھی فارنرز ایکٹ کی دفعہ 7 کے تحت مقدمہ درج ہوا ہے۔اور اطلاعات کے مطابق اقرا جیوانی پاکستان میں اپنے خاندان کے افراد سے رابطہ کرنے کی کوشش کر رہی تھیں اور اس طرح ان کی اصل شناخت سامنے آ گئی۔ پاکستان میں اپنے اہل خانہ سے رابطے کی کوشش کے دوران بھارتی انٹیلی جنس بیورو نے انہیں پکڑا اور اس بارے میں ریاستی انٹیلی جنس حکام کو آگاہ کر دیا۔اسی اطلاع کی بنیاد پر سٹی پولیس نے جوڑے کے بارے میں تفصیلات جمع کرنی شروع کر دیں اور ان کے گھر پر چھاپہ مارا گیا۔۔رؤف کلاسرا نے پروگرام کے اختتام میں بتایا کہ محبت میں انڈیا پاکستان سرحد عبور کرنے کا یہ اس طرح کا پہلا معاملہ نہیں ہے۔سال 2022 میں ہی راجستھان کی ایک خاتون کو آن لائن لڈو کھیلتے ہوئے ایک پاکستانی شخص سے پیار ہوگیا تھا، اور انھیں واہگہ بارڈر کے قریب گرفتار کیا گیا تھا جب کہ وہ اس شخص سے ملنے کے لیے مبینہ طور پر سرحد عبور کرنے والی تھیں۔دسمبر 2021 میں پاکستان کے شہر بہاولپور کے 21 سالہ رہائشی محمد احمر نے ممبئی میں اپنی محبوبہ سے ملنے کی خاطر غیرقانونی طریقے سے سرحد عبور کی تھی لیکن اپنی منزل پر پہنچنے کے بجائے انڈیا کے ایک صحرائی ضلع میں انڈین سکیورٹی فورسز کے ہاتھوں پکڑے گئے۔اور سال 2012 میں ایک انڈین شہری حامد انصاری کو ایک پاکستانی خاتون سے محبت ہو گئی تھی اور وہ مبینہ طور پر افغانستان کے راستے پاکستان چلے گئے۔ انھیں جعلی پاکستانی شناختی کارڈ کے ساتھ پکڑا گیا تھا اور جاسوسی کا مجرم قرار دیا گیا تھا۔ وہ 2018 میں رہا ہوئے تھے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
آن لائن لڈو کھیلتے کھیلتے پاکستانی اقرا کو بھارتی ملائم سنگھ یادیو سے پیار ہو گیا ، لڑکی براستہ نیپال بینگلور پہنچ گئی، دونوں کی محبت کا انجام کیا ہوا ؟ جانیں  is highly popular post having 3 Twitter shares
Share with your friends
Powered by ESSB

Adblock Detected

We are working hard for keeping this site online and only showing these promotions to get some earning. Please turn off adBlocker to continue visiting this site