کورونا کی علامات پر وسیع پیمانے پر کی گئی تحقیق کے نتائج سامنے آ گئے

کورونا پر وسیع پیمانے پر ہونے والی تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ مسلسل کھانسی اور بخار اس بیماری کی سب سے بڑی علامتیں ہیں، دیگر علامات میں تھکاوٹ، سونگھنے کی صلاحیت سے محرومی اور سانس لینے میں تکلیف شامل ہیں۔

عالمی ادارہ صحت نے وبا کے ابتدا میں کورونا کی جو علامات بتائی تھیں، یہ تحقیق ان تمام کی توثیق کرتی ہے۔

کونسی علامت کتنے فیصد افراد میں پائی گئی؟

یہ اپنی نوعیت کی ایک بڑی ریسرچ ہے جو اس نئے کورونا وائرس کی علامات پر کی گئی ہے، اس کے مطابق 78 فیصد مریضوں میں بخار تھا مگر اس کی شرح مختلف ممالک میں ایک جیسی نہیں تھی۔ سنگاپور میں 72 فیصد مریضوں میں بخار موجود تھا جبکہ کوریا میں یہ شرح صرف 32 فیصد تھی۔

ریسرچ کے مطابق 57 فیصد مریضوں کو کھانسی کا مسئلہ درپیش رہا، اس میں بھی ممالک کا فرق شرح میں تبدیلی کا باعث بنا، ہالینڈ میں 76 فیصد مریضوں میں کھانسی رہی جبکہ کوریا میں یہ شرح 18 فیصد تھی۔

کورونا کی علامات کئی ہفتوں تک جاری رہ سکتی ہیں، نئی تحقیق میں انکشاف

کورونا وائرس کی نئی علامات سامنے آ گئیں، کل تعداد 9 ہو گئی

31 فیصد مریضوں کو تھکاوٹ کا سامنا رہا، 25 فیصد کی سونگھنے کی صلاحیت ختم ہوئی اور 23 فیصد کو سانس لینے میں تکلیف کا سامنا کرنا پڑا۔

ریسرچرز کا خیال ہے کہ مختلف ممالک میں علامات کی شرح میں فرق کی وجہ ڈیٹا اکٹھا کرنے کا مختلف طریق کار ہے۔

اسپتال جانے والے مریض

اسپتال جانے والے مریضوں میں 17 فیصد کو سانس لینے کے لیے کسی مشین کی ضرورت نہیں پڑی، 19 فیصد کو انتہائی نگہداشت کے یونٹ میں رہنا پڑا، 9 فیصد کو مصنوعی نالیوں کی ضرورت پڑی اور 2 فیصد کو مصنوعی پھیپھڑے کے ذریعے سانس فراہم کی گئی۔

لیڈز انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل ریسرچ کے سرجن رکی ویڈ کا کہنا ہے کہ اس ریسرچ کی بہت اہمیت ہے کیونکہ جن افراد میں یہ علامات پائی جائیں انہیں فوری طور پر الگ تھلگ ہو جانا چاہیئے تاکہ وہ دوسرے افراد کو متاثر نہ کر سکیں۔

انہوں نے کہا کہ اس ریسرچ سے یہ بات بھی سامنے آتی ہے کہ ہم وبا کی علامات پہچاننے میں درست رستے پر گامزن ہیں، اس سے ہمیں اس بات کا تعین کرنے میں مدد ملتی ہے کہ کن افراد کو ٹیسٹ کرنا ضروری ہے۔

اس تحقیق میں یونیورسٹی آف لیڈز، یونیورسٹی آف شیفیلڈ، یونیورسٹی آف برسٹل، امپیریل کالج لندن اور بیلجیم کینسر سنٹر کے سائنسدان شامل تھے۔

ٹیگ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

We are working hard for keeping this site online and only showing these promotions to get some earning. Please turn off adBlocker to continue visiting this site
کورونا کی علامات پر وسیع پیمانے پر کی گئی تحقیق کے نتائج سامنے آ گئے is highly popular post having 1 Twitter shares
Share with your friends
Powered by ESSB