اٹلی میں ریچھ کو سزائے موت سنائے جانے پر ہنگامہ برپا ہو گیا

اٹلی میں ہائیکنگ ٹریل پر جانے والے باپ اور بیٹے پر ریچھ نے حملہ کر دیا جس سے دونوں زخمی ہو گئے۔

اٹلی کے قوانین کے مطابق انسانوں پر حملہ کرنے والے جانوروں کو موت کی سزا دی جاتی ہے۔

تفصیل کے مطابق 59 سالہ فیبیو مسیرونی اور ان کا 28 سالہ بیٹا کرسچن مسیرونی ماؤنٹ پیلر میں ہائیکنگ کر رہے تھے کہ اچانک ایک ریچھ ان کے سامنے نمودار ہو گیا۔

بھارت میں بندروں نے حملہ کر کے کورونا وائرس کے نمونے چرا لیے

بھارت کے جنگلات سے انتہائی نایاب ‘بھیڑیا سانپ’ دریافت

کرسچن نے سی این این سے بات کرتے ہوئے واقعہ کی تفصیلات بتائیں کہ پہلے ریچھ نے میرے اوپر حملہ کیا اور میری ٹانگ چبا ڈالی، میرے والد نے ریچھ کو پیچھے سے پکڑا تاکہ وہ مجھے چھوڑ دے۔

انہوں نے بتایا کہ ریچھ نے پلٹ کر اس کے والد پر حملہ کر دیا اور دونوں ہی گتھم گتھا ہو گئے، اس حملے کے نتیجے میں میرے والد کی ٹانگ تین جگہوں سے ٹوٹ گئی۔ بعد ازاں ریچھ دونوں کو چھوڑ کر جنگل کی طرف بھاگ گیا۔

اس واقعہ کے بعد ٹرنٹینو کے گورنر نے ریچھ کر پکڑ کر ہلاک کر دینے کے حکمنامے پر دستخط کر دیے، اس وقت حکام ڈی این اے کے ذریعے ریچھ کی تلاش میں مصروف ہیں۔

جانوروں کے حقوق کے گروہوں کی جانب سے اس حکمنامے کے خلاف سخت ردعمل سامنے آیا ہے اور انہوں نے مطالبہ  کیا ہے کہ وہ مکمل تحقیق سے قبل ریچھ کو سزائے موت دینے کا فیصلہ واپس لیں۔

ان کا کہنا ہے کہ اس بات کی بھی تحقیق ہونی چاہیئے کہ کہیں باپ اور بیٹے نے ایسی حرکت تو نہیں کی جس کے باعث ریچھ بھڑک اٹھا ہو، فیبیو مسیرونی اور ان کا بیٹا ایسی کسی بھی حرکت کا انکار کرتے ہیں۔

اس حوالے سے ایک پیٹیشن پر تقریباً 15000 افراد دستخط کر چکے ہیں جس میں جانوروں کی سزائے موت پر مکمل پابندی کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

اٹلی کے وزیر ماحولیات نے بھی ایک خط میں لکھا ہے کہ وہ ریچھ کی سزائے موت کے خلاف ہیں کیونکہ ہو سکتا ہے کہ وہ ریچھنی ہو اور اپنے بچوں کو بچانے کی کوشش کر رہی ہو۔

اس علاقے میں اس سے قبل بھی ریچھوں کے حملوں کے واقعات رونما ہو چکے ہیں، گزشتہ ماہ ایک باپ اور بیٹی کے پیچھے ریچھ پڑ گیا تھا جس کی ویڈیو بھی بنا لی گئی تھی، تاہم اس نے حملہ نہ کیا اور دونوں کی جان بچ گئی۔

ٹیگ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

We are working hard for keeping this site online and only showing these promotions to get some earning. Please turn off adBlocker to continue visiting this site