امریکی صدرٹرمپ کا کورونا کے علاج کے لیے ایک بار پھر ہائیڈرو کلوروکین کا دفاع

اگرچہ عالمی ادارہ صحت نے کورونا مریضوں کو ہائیڈرو کلوروکین کے استعمال سے منع کر دیا ہے لیکن امریکی صدر ابھی تک اپنے بیان پر قائم ہیں۔

انہوں نے ایک مرتبہ پھر اس بات کو دہرایا ہے کہ ہائیڈرو کلوروکین کا استعمال کورونا مریضوں کیلئے فائدہ مند ہے۔ انہوں نے دعویٰ کیا ہے کہ ہائیڈرو کلورکین کا استعمال اس لیے مسترد کیا گیا ہے کہ اسے میں نے تجویز کیا تھا۔

صدر ٹرمپ کا بیان ان کے بیٹے کی جانب سے ہائیڈرو کلوروکین سے متعلق  ویڈیو ٹویٹ  کے بعد آیا ہے، ٹویٹر نے انہیں اپنی ٹویٹ ڈیلیٹ کرنے کا کہا ہے اور ساتھ ہی 12 گھنٹوں کے لیے ان کے اکاؤنٹ کو محدود کر دیا ہے۔

ملیریا کی گولیاں مودی، ٹرمپ بندھن مضبوط کرنے کا باعث بن گئیں

سائنسدانوں کو ہائیڈرو کلوروکین کے متعلق کوئی ایسے ثبوت نہیں مل سکے جن سے یہ ثابت ہو کہ وہ وائرس کیخلاف بہتر کام کرتی ہے۔

عالمی ادارے اور ماہرین ہائیڈرو کلوروکین کو استعمال نہ کرنے کی ہدایت کرچکے ہیں، ان کا کہنا ہے کہ اس دوا کے استعمال سے دل کو نقصان پہنچ سکتا ہے۔

یاد رہے کہ ہائیڈرو کلوروکین 70 سال سے ملیریا کے علاج کے لیے  استعمال ہو رہی ہے، امریکہ نے بھارت سے بڑی تعداد میں اس کی کھیپ بھی منگوائی تھی جس کا سوشل میڈیا پر بہت چرچا رہا تھا۔

ڈونلڈ ٹرمپ امریکی سائنسدان انتھونی فاؤچی کی پذیرائی پر بھی پریشان ہیں، انہوں نے طنز کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہر کوئی انتھونی فاؤچی کو پسند کرتا ہے، مجھے نہیں۔

تاہم انہوں نے یہ بھی کہا ہے کہ ان کے فاؤچی کے ساتھ تعلقات ٹھیک ہیں، وہ اچھا کام کر رہے ہیں۔

ٹیگ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

We are working hard for keeping this site online and only showing these promotions to get some earning. Please turn off adBlocker to continue visiting this site