ڈاکٹر عاصم صہبائی

  • کالممکافات عمل

    مکافات عمل

    آج فجر کے وقت آنکھ کھلی تو پہلے اپنے رب کی بارگاہ میں شکرانہ ادا کیا ۔ پھر یہ خیال آیا کہ اللہ تعالی کی ذات کتنی عظیم ہے ۔ اپنے بندہ سے ستر ماﺅں سے زیادہ محبت کرتی ہے۔ میری والدہ اس وقت امریکہ کے ایک دوسرے شہر میں رہتی ہیں جو یہاں سے تقریباً ایک ہزار میل دور ہے ۔ اُن سے روزانہ فون پر ایک دفعہ تفصیلی بات ہوتی ہے جبکہ اللہ تعالیٰ کی وہ ذات ہے جس سے دن میں پانچ بار ملاقات ہوتی ہے ، دعائیں مانگنے کا موقعہ ملتا ہے اور احساس ہوتا ہے کہ وہ ذات ہر وقت ہماری طرف متوجہ…

    مزید پڑھیں
  • انتخابمیں چھوٹا سا ایک وائرس ہوں

    میں چھوٹا سا ایک وائرس ہوں

    آج ذکر کرتے ہیں کچھ کورونا وائرس کا ، کیا عجیب و غریب ، بے تکا اور گھٹیا قسم کا وائرس ہے ، چمگادڑوں کو چھوڑ کر انسانوں میں آبسا اور لگتا ہے ہر شخص کو یہ اپنی گرفت میں لے چکا ہے یا لے لے گا ، جب یہ بندہ کو قابو کرتا ہے تو کہتا ہے ‘بچو! بہت چالاک بنتے تھے ، پکڑے گئے نا’ ! اس کا آغاز چین سے ہوا اور اگر یہ یاجوجی ماجوجی قوم کتے بلے ، سانپ ، چھچوندر اور چمگادڑوں کو نہ کھاتے تو شاید ہم اس سے محفوظ رہتے ۔ جتنا بھی انسان ’ اشرف المخلوقات ‘ رب کے…

    مزید پڑھیں
  • انتخابمریض سے زیادہ ڈاکٹر کو علاج کی ضرورت؟

    مریض سے زیادہ ڈاکٹر کو علاج کی ضرورت؟

    آج میں اپنا پہلا کالم لکھنے لگا ہوں ۔ میں امریکہ میں مقیم ایک پاکستانی نژاد ڈاکٹر ہوں۔ کینسر (سرطان ) کے علاج کا ماہر ہوں جس کو انکالوجسٹ (Oncologist)  کہتے ہیں ۔ پاکستان سے دور رہتا ہوں لیکن دل پاکستان میں رہتا ہے ۔ میری خواہش ہے کہ اپنے ملک میں آکر غریب مریضوں کا علاج کروں، اگر اللہ نے چاہا تو ضرور یہ خواہش پوری ہوگی۔  پاکستان کے اسپتالوں کو دیکھ  کر اور ڈاکٹروں کی اکثریت کو دیکھ کر دل دُکھتا ہے اس لیے آج دل چاہا کہ کچھ ڈاکٹری کے حوالہ سے بات کی جائے۔ میری والدہ افسانہ صہبائی اور نانا مسعود احمد خان دونوں…

    مزید پڑھیں
Back to top button
ڈاکٹر عاصم صہبائی is highly popular post having 1 Twitter shares
Share with your friends
Powered by ESSB

Adblock Detected

We are working hard for keeping this site online and only showing these promotions to get some earning. Please turn off adBlocker to continue visiting this site