معیشت

معشیت کے میدان سے تازہ ترین خبریں

  • Photo of ٹریکٹرز پر حکومت کتنا ٹیکس وصول کر رہی ہے؟ تفصیلات سامنے آ گئیں

    ٹریکٹرز پر حکومت کتنا ٹیکس وصول کر رہی ہے؟ تفصیلات سامنے آ گئیں

    سینیٹ کمیٹی نیشنل فوڈ سیکیورٹی اینڈ ریسرچ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ امپورٹ کیے جانے والے ٹریکٹرز پر33 فیصد ڈیوٹی اور ٹیکس ادا کرنا پڑتا ہے۔ نیشنل فوڈ اینڈ سیکیورٹی کمیٹی کے اجلاس میں ایک ایجنڈا بیلارس ٹریکٹر کی قیمت سے متعلق تھا جس میں سوال کیا گیا تھا کہ پاکستان میں زیادہ تر کسان بیلارس ٹریکٹر استعمال کرتے ہیں جس کی اب قیمت 25 لاکھ روپے تک پہنچ چکی ہے۔ اس ٹریکٹر کی امپورٹ میں سبسڈی کے لیے حکومت کیا اقدامات کر رہی ہے؟ چیئرمین کمیٹی سینیٹرسید مظفر حسین شاہ نے کہا کہ بیلارس ٹریکٹر 26-27 لاکھ روپے کا ہو چکا ہے اس…

    مزید پڑھیں
  • Photo of ریسٹورنٹس کا کھانا ڈیلیور کرنے والی کمپنیوں کے لیے پالیسی وضع کرنے کا مطالبہ

    ریسٹورنٹس کا کھانا ڈیلیور کرنے والی کمپنیوں کے لیے پالیسی وضع کرنے کا مطالبہ

    آل پاکستان ریسٹورنٹ ایسوسی ایشن ( ایپرا) نے کہا ہے کہ کھانا ڈیلیور کرنے والی کمپنیوں نے کمیشن میں اضافے کے لیے آئے دن ریسٹورنٹس کو بلیک میل کرنا معمول بنا لیا ہے جس سے یہ کاروبار مشکلات کا شکار ہو گیا ہے۔ ایپرا کے سیکرٹری جنرل سلمان علیم نے نقار خانہ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ان کمپنیوں کے لیے سرکاری سطح پر پالیسی وضع کی جائے تاکہ اس شعبے میں کسی قسم کی اجارہ داری کا خاتمہ کیا جا سکے۔ اپیرا نے جمعہ کو جاری ایک بیان میں وزیراعظم عمران خان کی توجہ ریسٹورنٹس انڈسٹری کو درپیش اہم مسئلے کی جانب مبذول…

    مزید پڑھیں
  • Photo of 2018 کے دوران تنخواہ دار طبقے، کاروباری افراد، کمپنیوں کا انکم ٹیکس ریکارڈ سامنے آ گیا

    2018 کے دوران تنخواہ دار طبقے، کاروباری افراد، کمپنیوں کا انکم ٹیکس ریکارڈ سامنے آ گیا

    وفاقی کابینہ نے مسلم لیگ (ن) کے دور حکومت کے آخری سال کی ٹیکس ڈائرکٹری شائع کرنے کی منظوری دے دی ہے۔ تفصیلات کے مطابق 2018 کے دوران 11 لاکھ 30 ہزار تنخواہ دار افراد نے 129 ارب روپے کا انکم ٹیکس ادا کیا جو ایک شخص کی ایک لاکھ 14 ہزار روپے کی اوسط بنتی ہے۔ 14 لاکھ 10 ہزار کاروباری افراد نے 185 ارب روپے کا ٹیکس ادا کیا جو فی شخص ایک لاکھ 31 ہزار کی اوسط بنتی ہے۔ 2018 میں تنخواہ دار اور کاروباری طبقے کے درمیان ٹیکس کی شرح تقریباً برابر ہے جس سے یہ نتیجہ اخذ کیا جا سکتا…

    مزید پڑھیں
  • Photo of حکومتی دعوے غلط ثابت، گردشی قرضوں میں تقریباً ڈیڑھ ارب روپے روزانہ کا اضافہ

    حکومتی دعوے غلط ثابت، گردشی قرضوں میں تقریباً ڈیڑھ ارب روپے روزانہ کا اضافہ

    گردشی قرضوں میں ماہانہ 12 ارب روپے کمی کے حکومتی دعوؤں کے برعکس اس میں مزید اضافہ ہو گیا ہے اور یہ گزشتہ برس بڑھ کر 44.8 ارب روپے ماہانہ تک پہنچ گئے ہیں۔ 2019-20 کے مالی سال کے دوران گردشی قرضوں کی مجموعی مقدار 538 ارب روپے رہی جس کی ماہانہ اوسط 44.8 ارب روپے اور روزانہ کی اوسط 1.48 ارب روپے بنتی ہے۔ گردشی قرضوں کی مجموعی مالیت 22 سو ارب روپے کی خطرناک حد تک پہنچ گئی ہے، گزشتہ 20 برسوں کے دوران کوئی بھی حکومت ان قرضوں پر لگام نہیں ڈال سکی اور یہ ہر حکومت کے لیے ایک مستقل درد…

    مزید پڑھیں
  • Photo of 81 فیصد کاروباری افراد بزنس کے بہتر مستقبل کے متعلق پریقین، گیلپ سروے

    81 فیصد کاروباری افراد بزنس کے بہتر مستقبل کے متعلق پریقین، گیلپ سروے

    گیلپ کے حالیہ سروے کے مطابق 55 فیصد کاروباری افراد سمجھتے ہیں کہ پاکستان درست سمت میں جا رہا ہے جبکہ 45 فیصد اس کے برخلاف سوچتے ہیں، سال کی پہلی سہ ماہی میں 40 فیصد لوگوں نے پاکستان کے درست سمت میں جانے کا امکان ظاہر کیا تھا۔ گیلپ بزنس کانفیڈنس انڈیکس (بی سی آئی) سروے کے نتائج کے مطابق 81 فیصد کاروباری طبقے نے مستقبل کی بہتری کے یقین کا اظہار کیا۔ مستقبل کا مجموعی کاروباری اعتماد رواں برس کی پہلی سہ ماہی کے مقابلے میں 61 فیصد بڑھا ہے۔ یہ بی سی آئی کی تیسری رپورٹ ہے جس میں 450 سے زائد…

    مزید پڑھیں
  • Photo of پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 9 روپے فی لیٹر تک اضافے کا امکان

    پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 9 روپے فی لیٹر تک اضافے کا امکان

    اسلام آباد: یکم ستمبر سے 15 روز کے لیے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 9 روپے فی لیٹر تک اضافے کا امکان ہے۔ باخبر ذرائع کے مطابق اوگرا نے تیل کی قیمتوں کے نظرثانی شدہ فارمولے پر کام مکمل کر لیا ہے اور اب ہر 15 روز کے لیے قیمتوں میں ردوبدل کیا جائے گا۔ نظرثانی شدہ فارمولے کی بنیاد ہائی اسپیڈ ڈیزل اور پیٹرول پر 30 روپے فی لیٹر لیوی وصول کی جائے گی جو اس سے قبل بالترتیب 25.73 اور 27.70 روپے تھی۔ ڈان اخبار کے مطابق ایکسچینج ریٹ میں ردوبدل اور قیمتیں طے کرنے کے نئے طریق کار کے بعد پیٹرول اور…

    مزید پڑھیں
  • Photo of پی ٹی آئی حکومت کے 2 برس کے دوران بیرونی قرضوں میں 17.6 ارب ڈالرز کا اضافہ

    پی ٹی آئی حکومت کے 2 برس کے دوران بیرونی قرضوں میں 17.6 ارب ڈالرز کا اضافہ

    پاکستان کے بیرونی قرضوں اور واجبات میں گزشتہ 2 برس کے دوران 17 ارب 60 کروڑ ڈالرز کا اضافہ ہوا ہے جس کے بعد یہ 112 ارب 80 کروڑ ڈالر تک پہنچ گئے ہیں جو ملکی تاریخ کا سب سے زیادہ قرضہ ہے۔ اسٹیٹ بینک کے مطابق 2 برسوں کے دوران لیے گئے قرض کا 87 فیصد پبلک جبکہ بقیہ نجی سیکٹر کی جانب سے لیا گیا ہے۔ پبلک سیکٹر کے قرضوں کی براہ راست یا بالواسطہ حکومت کی ذمہ داری ہوتی ہے۔ جب پاکستان تحریک انصاف کی حکومت آئی تھی تو پاکستان پر واجب الادا بیرونی قرضے اور واجبات 95 ارب 20 کروڑ ڈالرز…

    مزید پڑھیں
  • Photo of سوزوکی کمپنی کا ایک مقبول ماڈل کی فروخت ختم کرنے کا فیصلہ

    سوزوکی کمپنی کا ایک مقبول ماڈل کی فروخت ختم کرنے کا فیصلہ

    سوزوکی مہران جیسے سدا بہار ماڈل کے بعد کمپنی نے مقامی مارکیٹ میں ایک اور مقبول ماڈل سوزوکی سوئفٹ کی فروخت ختم کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ رپورٹس کے مطابق پاک سوزوکی موٹرز سیکنڈ جنریشن سوزوکی سوئفٹ کی فروخت روکنے کا ارادہ رکھتی ہے، اس حوالے سے کمپنی کا یہ فیصلہ سامنے آیا ہے کہ یہ ماڈل اگلے سال اگست کے بعد مقامی مارکیٹ میں فروخت نہیں کیا جائے گا۔ سوزوکی سوئفٹ ایک مقبول ماڈل ہے جسے پاکستان میں 2010 میں فروخت کے لیے پیش کیا گیا تھا، اس کا فروخت کا ریکارڈ بھی بہت شاندار رہا ہے۔ تاہم گزشتہ کئی برسوں سے اس…

    مزید پڑھیں
  • Photo of جی آئی ڈی سی کی وصولی سے معیشت ڈوب جائے گی، صنعتکاروں کا ردعمل سامنے آ گیا

    جی آئی ڈی سی کی وصولی سے معیشت ڈوب جائے گی، صنعتکاروں کا ردعمل سامنے آ گیا

    فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹریز (ایف پی سی سی آئی) نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اربوں روپے جی آئی ڈی سی کی وصولی سے ملک کی میعشت ڈوب جائے گی۔ واضح رہے کہ سپریم کورٹ نے گزشتہ ہفتے اس معاملے پر فیصلہ دیتے ہوئے حکومت کو حکم دیا تھا کہ کمپنیوں پر واجب الادا سیس کی مد میں 4  سو ارب روپے سے زائد کی رقم وصول کرے۔ انڈسٹریل سیکٹر سپریم کورٹ کے فیصلے پر نظر ثانی درخواست دائر کرنے پر غور کر رہا ہے۔ ایف پی سی سی آئی نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ کورونا لاک ڈاون…

    مزید پڑھیں
  • Photo of سعودی عرب نے چین کے ساتھ 10 ارب ڈالر کی ریفائنری کا معاہدہ معطل کر دیا

    سعودی عرب نے چین کے ساتھ 10 ارب ڈالر کی ریفائنری کا معاہدہ معطل کر دیا

    ریاض : سعودی عرب کی ریاستی کمپنی آرامکو نے چین میں 10 ارب ڈالرز کی مالیت کی آئل ریفائنری لگانے کا معاہدہ معطل کر دیا ہے۔ یہ ریفائنری چین کے شمال مشرقی صوبے لائیاننگ میں قائم ہونی تھی، کمپنی کا کہنا ہے کہ تیل کی کم ہوتی قیمتوں کی وجہ سے وہ اپنے اخراجات میں کمی لا رہی ہے اور اسی وجہ سے یہ معاہدہ معطل کیا گیا ہے۔ معاہدے پر اس وقت دستخط ہوئے تھے جب گزشتہ برس فروری میں سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے چین کا دورہ کیا تھا، اس معاہدے میں چائنا نارتھ انڈسٹریز گروپ اور پنجب سنسن دیگر…

    مزید پڑھیں
Back to top button
Close

Adblock Detected

We are working hard for keeping this site online and only showing these promotions to get some earning. Please turn off adBlocker to continue visiting this site