کالم

column

  • جون- 2021 -
    8 جون

    کینیڈا میں پاکستانی نژاد خاندان کا اندوہناک قتل،وزیراعظم عمران خان کا سخت ردِعمل آ گیا

    اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک ) وزیراعظم عمران خان نے کینیڈا میں مسلمان پاکستانیوں کے ہونے والے قتل کے واقعے کی شدید مذمت کی ہے،تفصیلات کے مطابق کینیڈا کے جنوب میں صوبہ اونٹاریو میں ایک شخص نے پک اپ ٹرک ایک مسلمان خاندان پر چڑھا دیا جس کے نتیجے میں 4 افراد جاں بحق ہوگئے ہیں پولیس نے اس واقعہ کو ایک نفرت انگیز ” سوچا سمجھا“حملہ قرار دیا ہے ۔وزیراعظم عمران خان نے کینیڈا 4 پاکستانیوں کے قتل کے واقعے کی شدید مذمت کی ہے۔انہوں نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ کینیڈا میں پاکستانی نژاد مسلم فیملی کے…

    مزید پڑھیں
  • 4 جون

    اپوزیشن فوج سمیت کسی بھی ذریعہ سے حکومت گرانا چاہتی ہے ،وزیراعظم

    اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک )وزیراعظم عمران خان نے کہاہے کہ اپوزیشن ذاتی مفادات کی جنگ لڑ رہی ہے ، یہ لوگ فوج سمیت کسی بھی ذریعہ سے حکومت گرانا چاہتے ہیں کیونکہ چینی ،قبضہ اورسیاسی مافیا کی چوریاں پکڑی جارہی ہیں ۔لوداں تا ملتان سڑکوں کی اپ گریڈیشن اور بحالی کے سنگ بنیاد کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہاکہ (ن)لیگی حکومت کہتی تھی کہ ہم نے سڑکوں کا جال بچھایا تو پچھلی حکومت نے صرف دو ہزار کلومیٹر سڑکیں بنائیں جبکہ ہم نے تین ہزار کلومیٹر سڑکیں صرف ڈھائی سال میں بنائی ہیں اور تحریک انصاف حکومت نے پچھلی حکومت کے مقابلے میں…

    مزید پڑھیں
  • مئی- 2021 -
    14 مئی

    ڈاکٹر زواگو

    جب امر شاہد نے مجھے فون کر کے کہا: یہ حکم شکیل عادل زادہ صاحب کا ہے‘ تو مجھے لگا شاید مجھے سننے میں غلطی ہوئی ہے۔ میں نے دوبارہ پوچھا تو ہنس کر امر شاہد نے کہا: جی یہ شکیل صاحب کا ہی حکم ہے۔شکیل عادل زادہ صاحب نے روسی ادبی تاریخ کے بڑے ناولز میں سے ایک ”ڈاکٹر زواگو ‘‘کے بارے امر شاہد اور گگن شاہد کو کہا تھا کہ اس کے اردو ترجمہ کا بیک کور تعارف رئوف سے لکھوائیں۔ یہ ناول شکیل عادل زادہ کی فرمائش پر چھاپا جا رہا تھا۔ اس کا اردو ترجمہ صحافی یوسف صدیقی صاحب نے کیا…

    مزید پڑھیں
  • دسمبر- 2020 -
    7 دسمبر

    کورونا اور عالمی انسانیت کو نگلتے نظام کی اصل کہانی

    عالمی سطح پر بدلتی ہوئی معاشی اور سفارتی پالیسیوں نے وطن عزیز سمیت کئی ممالک میں نئی بحث کو جنم دیا ہے جس کے تحت یہ سمجھا جارہا ہے کہ مشرق وسطیٰ کے دوست ممالک آنیوالے حالات میں پاکستان سے دور جا رہے ہیں تاہم مشرق وسطیٰ کے اندر کیے جانے والے ایک سروے نے ان ریاستوں کے حکمرانوں کو اپنی پالیسیوں پر نظر ثانی پر مجبور کر دیا ہے۔  ایک حالیہ سروے میں ان خیالات کی مکمل تصدیق ہوئی ہے جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ عرب رائے عامہ خطے کے ملکوں اور عالمی طاقتوں کی خارجہ پالیسوں کو رد کرتی ہے ۔ سروے…

    مزید پڑھیں
  • 5 دسمبر
    سیاست کے سینے میں دل نہیں ہوتا

    سیاست کے سینے میں دل نہیں ہوتا

    کورونا کی تباہ کاریاں ہر گزرتے دن کے ساتھ بڑھتی ہی چلی جا رہی ہیں۔ ہم ان دنوں جون والی صورتحال سے دوچار ہیں۔ ویسے داد تو عوام کو بھی دینی چاہئیے جو کورونا کی دوسری لہر کی سنگینی سے بے نیاز گلیوں بازاروں میں آزادانہ گھوم پھر رہے ہیں۔ کسی کو اس بات سے غرض نہیں کہ انکی اور دوسروں کی جانوں کو اس موذی وائرس سے کس قدر خطرات لاحق ہیں۔ ویسے یہ بے نیازی ہم نے گزشتہ 73سال سے زندگی کے تمام شعبوں سے روا رکھی ہے اور آج ہم جہاں کھڑے ہیں یہ انہی بے نیازیوں کے ہی نتائج ہیں۔ رہی…

    مزید پڑھیں
  • 4 دسمبر
    کہاں ہے بیباک صحافت ؟

    کہاں ہے بیباک صحافت؟

    وزیر اعظم عمران خان سے جب نیب میں گرفتاریوں سے متعلق سوال کیا گیا کہ آپ اپنی پارٹی ممبران کو تو اسکینڈل آنے کے بعد بھی پارٹی کی رکنیت سے خارج نہیں کرتے جبکہ دوسروں کے احتساب کی بات پر آپ منہ پہ ہاتھ پھیر کر قسم کھاتے ہیں کہ ان کو نہیں چھوڑوں گا تو عمران خان صاحب اس سوال کے جواب پر کچھ مشکل میں گھرے نظر آئے۔ جہانگیر ترین کے حوالے سے انہوں نے صاف کہہ دیا کہ ان پر تو محض الزام ہے، ابھی معاملہ تفتیش کے مراحل میں ہے۔ مجھے یوں لگا جو بندہ اس نظام سیاست کو بدلنے کا…

    مزید پڑھیں
  • نومبر- 2020 -
    30 نومبر
    مکافات عمل

    مکافات عمل

    آج فجر کے وقت آنکھ کھلی تو پہلے اپنے رب کی بارگاہ میں شکرانہ ادا کیا ۔ پھر یہ خیال آیا کہ اللہ تعالی کی ذات کتنی عظیم ہے ۔ اپنے بندہ سے ستر ماﺅں سے زیادہ محبت کرتی ہے۔ میری والدہ اس وقت امریکہ کے ایک دوسرے شہر میں رہتی ہیں جو یہاں سے تقریباً ایک ہزار میل دور ہے ۔ اُن سے روزانہ فون پر ایک دفعہ تفصیلی بات ہوتی ہے جبکہ اللہ تعالیٰ کی وہ ذات ہے جس سے دن میں پانچ بار ملاقات ہوتی ہے ، دعائیں مانگنے کا موقعہ ملتا ہے اور احساس ہوتا ہے کہ وہ ذات ہر وقت…

    مزید پڑھیں
  • 29 نومبر

    مہنگائی کا عفریت اور بے بس حکومت

    پاکستان میں رہنے والے آجکل مہنگائی کے ہاتھوں بے حال ہیں۔ عمران خان کا تبدیلی کا نعرہ عام آدمی کی کمر توڑتا نظر آرہا ہے۔ اس کے باوجود کاروبار ریاست جیسے لیبارٹری میں ٹیسٹ ہو رہے ہیں کہ ایک تجربہ ناکام ہوا تو دوسرا کیجئے، ایک وزیر ناکام ہوا تو دوسرا آزمائیے جبکہ ہونا تو یہ چاہئے کہ جو کام ٹھیک سے نہیں ہورہا اسی کو ٹھیک سے کرانے پر توجہ دی جائے یا جو وزیر اپنے کام ٹھیک سے انجام نہیں دے سکا اسے مجبور کیا جائے کہ وہ اپنی وزرات کی طرف بھرپور توجہ دے۔ وزیر اعظم اگر ذرا سختی کریں تو انہی…

    مزید پڑھیں
  • 28 نومبر
    قابل لوگ

    قابل لوگ

    آجکل قابل لوگ بہت زیادہ تعداد میں وفاقی کابینہ کا حصہ ہیں اور انکی قابلیت پہ کوئی شبہ بھی بلاشبہ نہیں کیا جاسکتا کیونکہ ان میں سے اکثر لوگ پچھلی حکومتوں میں بھی اپنی قابلیت کا لوہا منوا چکے ہیں اور اس حکومت میں بھی انکو ہی اپنی قابلیت دکھانے کا موقع ملا ہوا ہے۔ ایک سیاسی کارکن کی جماعت جب اپوزیشن میں ہوتی ہے تو وہ اپنی اس جماعت کیلئے کیا کچھ نہیں کرتا، اپنی ذات کے ہر پہلو کو دائو پہ لگا دیتا ہے کیونکہ اسے یقین ہوتا ہے کہ وہ جس نظریے کی لیے کام کر رہا ہے وہی صحیح ہے اور…

    مزید پڑھیں
  • 27 نومبر
    چھوٹے قد کا بونا قانون

    چھوٹے قد کا بونا قانون

     ایک انگریزی اخبار کے فرنٹ پیج پر خبر چھپی تھی کہ عمران خان نے وزیر قانون فروغ نسیم کو ملک بھر میں احتساب عدالتیں قائم کرنے کی اجازت دے دی۔ یہ عدالتیں سپریم کورٹ کے حکم کے تحت قائم کی جارہی ہیں جو بدعنوانی کے مقدمات کو جلد از جلد نمٹائیں گی ۔ پہلے مرحلے میں کے آغاز میں 30 کورٹس بدعنوانی کے مختلف مقدمات کا جائزہ لیں گی۔ دوسرے مرحلے کے آغاز کا تعین پہلے مرحلے کے کام کو دیکھنے کے بعد کیا جائے گا۔ وزیر اعظم عمران خان نے اسٹیبلشمنٹ اور فنانس ڈیپارٹمنٹس کو خصوصی ہدایات جاری کی ہیں کہ بدعنوانی کے مقدمات…

    مزید پڑھیں
  • 25 نومبر

    مارگلہ ریلوے اسٹیشن: ایک ادھوری کہانی

    یہ اسلام آباد کا مارگلہ ریلوے اسٹیشن ہے۔ شہر کے مزاج کی طرح خاموش، اداس اور ویران۔ یہاں نہ تو خوانچہ فروشوں کی آہو کار ہے، نہ سرخ وردی پہنے قُلیوں کی دھکم پیل۔ بس ایک سکوت کا عالم رہتا ہے۔ ماحول کا یہ سکوت صرف ریل کی آمد پر چند لمحوں کو ٹوٹتا ہے جو راولپنڈی سے کسی اژدھے کی مانند آتی ہے اور اِکا دُکا مسافروں کو نگل کر اسی راستے سے واپس چلی جاتی ہے۔ ڈوکیڈیس نے جب اس شہر کا نقشہ بچھایا تو سیکٹروں کی سیدھی لائنوں کے بیچوں بیچ زیرو پوائنٹ کے پاس کہیں ریلوے اسٹیشن کا بھی کوئی خانہ…

    مزید پڑھیں
  • 22 نومبر
    میں چھوٹا سا ایک وائرس ہوں

    میں چھوٹا سا ایک وائرس ہوں

    آج ذکر کرتے ہیں کچھ کورونا وائرس کا ، کیا عجیب و غریب ، بے تکا اور گھٹیا قسم کا وائرس ہے ، چمگادڑوں کو چھوڑ کر انسانوں میں آبسا اور لگتا ہے ہر شخص کو یہ اپنی گرفت میں لے چکا ہے یا لے لے گا ، جب یہ بندہ کو قابو کرتا ہے تو کہتا ہے ‘بچو! بہت چالاک بنتے تھے ، پکڑے گئے نا’ ! اس کا آغاز چین سے ہوا اور اگر یہ یاجوجی ماجوجی قوم کتے بلے ، سانپ ، چھچوندر اور چمگادڑوں کو نہ کھاتے تو شاید ہم اس سے محفوظ رہتے ۔ جتنا بھی انسان ’ اشرف المخلوقات…

    مزید پڑھیں
Back to top button

Adblock Detected

We are working hard for keeping this site online and only showing these promotions to get some earning. Please turn off adBlocker to continue visiting this site